January 2, 2020

ذرا ذرا سی بات پر وہ مجھ سے بد گماں رہے جو رات دن تھے مہرباں وہ اب نہ مہرباں رہے جدائیوں کی لذتوں کی وسعتیں نہیں رہیں وہ خوش خیال وصل بن کے میرے درمیاں رہے پہیلیاں بجھاؤ مت بہانے اب بناؤ مت یہیں کہیں نہیں تھے تم بتاؤ پھر کہاں رہے وہ میرے…

December 20, 2019

تجھ سے میں مجھ سے آشنا تم ہو میں لکھاوٹ تمہارے ہاتھوں کی میں لکھاوٹ تمہارے ہاتھوں کی میری تقدیر کا لکھا تم ہو تم اگر سچ ہو، میں بھی جھوٹ نہیں عکس میں، میرا آئنہ تم ہو بے خودی نے مرا بھرم توڑا میں سمجھتا رہا خدا تم ہو میں ہوں مجرم، مرے ہو…

New Book Out (Buy on Amazon)